Reiki for health care and well-being, Reiki training classes in Urdu and English, Reiki Master/Teacher Muhammad Akram Khan in Lahore, Pakistan

ریکی کی تربیّت کے مراحل

پہلے ایک مضمون میں لکھا جا چکا ہے کہ ریکی ہر کوئی عمر کے کسی بھی حصّے میں بہت آسانی سے سیکھ سکتا ہے۔ آپ بھی یقیناً سیکھ سکتے ہیں۔ طریقہ بھی مشکل نہیں ہے۔ اس کے لئے سب سے پہلے تو آپ کو ریکی سیکھنے کا فیصلہ کرنا ہو گا اور یہی چیز سب سے اہم بھی ہے۔ یہ فیصلہ کرنے کے لئے ضروری ہے کہ آ پ کو ریکی کے بارے میں زیادہ نہیں تو کم از کم بنیادی معلومات ضرور ہوں ورنہ آپ ”سیکھوں یا نہ سیکھوں“ کی حالت میں ہی رہیں گے۔ معلومات کے لئے آپ اس موضوع پر لکھی گئی کتابوں سے یا انٹرنیٹ سے استفادہ کر سکتے ہیں۔

ریکی سیکھنے کے لئے بہت زیادہ عرصہ نہیں چاہئے اور نہ ہی بہت سی کتابیں پڑھنا پڑتی ہیں۔ ریکی کی تربیّت کے عموماً چار مراحل ہوتے ہیں جو کورس یا درجے بھی کہلاتے ہیں۔ ظاہر ہے کہ ہر نیا سیکھنے والا پہلے درجے سے ہی شروع کرے گا۔ اگلے درجوں کی باری بعد میں آئے گی۔ اس کی ترتیب کچھ اس طرح سے ہے۔

پہلا درجہ
اس میں جسم پر ہاتھ رکھ کر علاج کرنا سکھایا جاتا ہے اور بنیادی معلومات اور طریقوں پر مشتمل ہوتا ہے۔ کوئی مخصوص سمبل نہیں سکھایا جاتا۔ اس درجے کے لئے بنیادی تعلیم اور عام فہم و فراست کافی ہوتی ہے۔

دوسرا درجہ
اس میں فاصلے سے علاج اور نفسیاتی بیماریوں کا علاج کرنا سکھایا جاتا ہے۔ فاصلے سے علاج کا مطلب یہ ہے کہ اگر مریض آپ کے پاس موجود نہ بھی ہو اور دنیا میں کہیں بھی رہتا ہو، تب بھی آپ اس کا علاج کر سکیں گے۔ اس درجے میں تین سمبل اور کچھ مخصوص طریقے سکھائے جاتے ہیں جنہیں یاد رکھنا اور پھر درست طریقے سے استعمال کرنا ضروری ہوتا ہے اس لئے یہ درجہ اور اس کے اگلے درجے بالکل غیر تعلیم یافتہ لوگوں کے لئے خاصے مشکل ہوتے ہیں جبکہ بچوں کو تو بالکل بھی نہیں سکھائے جاتے۔

تیسرا درجہ
یہ ماسٹر کا درجہ کہلاتا ہے۔ اس میں ماسٹر سمبل اور اس کا استعمال سکھایا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ ریکی کو استعمال کرنے کے مختلف قسم کے مخصوص طریقے سکھائے جاتے ہیں۔

ٹیچر کا درجہ
یہ آخری درجہ ہوتا ہے اور جیسا کہ نام سے بھی ظاہر ہے، یہ صرف اُن کے لئے ہوتا ہے جو ریکی ٹیچر بننا چاہتے ہوں ورنہ علاج معالجے کے لئے اس کی کوئی ضرورت نہیں ہوتی۔

ٹیچر کے درجے کے علاوہ ہر درجے کیلئے الگ الگ صرف ایک بار تین سے چار گھنٹے درکار ہوتے ہیں۔ تمام درجوں کی تربیّت لینا ضروری نہیں ہوتا۔ ہر کوئی اپنی ضرورت کے مطابق پہلے دو یا تین درجوں کی تربیّت لے سکتا ہے۔ اگر صرف ہاتھوں سے علاج کرنا مقصود ہو تو پہلا درجہ کافی ہوتا ہے لیکن اگر ریکی کو نفسیاتی علاج، فاصلے سے علاج اور بہت سے دیگر مقاصد کیلئے استعمال کرنا ہو تو پھر صرف پہلا درجہ کافی نہیں ہوتا۔ اس کے لئے کم از کم دوسرے درجے کی ضرورت ہوتی ہے۔ پہلے درجے کے فوائد چونکہ کافی محدود ہوتے ہیں اس لئے بہتر یہ ہوتا ہے کہ کم از کم پہلے دو درجوں کی تربیّت ضرور لی جائے۔

تربیّت کا دورانیہ
ہر درجے کی تربیّت کا دورانیہ مختلف ہوتا ہے جو عام طور پر کافی مختصر ہوتا ہے مگر یہ ٹیچر پر منحصر ہوتا ہے کہ وہ کتنی تفصیل سے سکھاتا ہے۔ اس طرح یہ دورانیہ ایک گھنٹے سے لے کر تین یا چار گھنٹے تک ہو سکتا ہے اور سوائے ٹیچر کے درجے کے، ہر درجے کے لئے کلاس میں صرف ایک بار شرکت کرنا ہوتی ہے۔ ٹیچر کے درجے کے لئے کئی روز درکار ہوتے ہیں جن کا دار و مدار عموماً طالب علم کی صلاحیت پر ہوتا ہے۔

جب آپ ریکی سیکھنے کا فیصلہ کر چکیں تو باقی کام نسبتاً آسان ہے۔ ریکی ٹیچر سے رابطہ کریں، وقت لیں اور جا کر سیکھ لیں۔ اگر مجھ سے سیکھنا چاہیں تو میری با قائدہ کلاس میں آ سکتے ہیں لیکن اگر کسی مجبوری کی وجہ سے کلاس میں نہیں آ سکتے تو خصوصی انفرادی کلاس کے لئے رابطہ کر سکتے ہیں۔

اگر آپ کو یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کے ساتھ شیئر کیجئے